چکوال میں نئی حلقہ بندیوں کے خلاف حلقہ پی پی 22کی عوام سراپا احتجاج

چکوال میں الیکشن کمیشن کی طرف سے ضلع چکوال میں نئی حلقہ بندیوں کے خلاف عوام سراپا احتجاج بن گئے۔بُدھ کے روز پرانے حلقہ پی پی 22کی عوام منتخب چیئرمین ،وائس چیئرمین اور کونسلر اچانک قصبہ اوڈھروال میں مسلم لیگ ن کے راہنما رکن پنجاب اسمبلی سردار ذوالفقار علی خان دلہہ کے پبلک سیکرٹریٹ قصبہ اوڈھروال میں سینکڑوں کی تعداد میں جمع ہو گئے۔اور شدید نعرے بازی کرتے ہوئے انہوں نے چیئرمین یوسی وروال سردار عامر عباس کی صدارت میں نمائندہ اجلاس منعقد کیا۔جسے چوہدری محمد زبیر ایڈووکیٹ،چوہدری ساجد وائس چیئرمین بلو کسر،جنرل کونسلر خالد محمود،چوہدری شاہد مطلوب کہوٹ،چوہدری ممتاز مینگن،چوہدری ارشد خان،ملک شاہد لطیف،سردار اعظم خان،راجہ غلام عباس،چوہدری صابر خان،چیئرمین بھر پور کرنل مشتاق احمد،چوہدری اعجاز،چوہدری نعیم،قاضی محمد اکرم ،ملک الطاف ،ملک عاشق حسین ،ماسٹر زمرد،ملک اشفاق احمد ایڈووکیٹ اور سردار عامر عباس نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نئی حلقہ بندیاں مسلم لیگ ن اور علاقہ کے عوام کے خلاف زبردست سازش کا نتیجہ ہے۔حلقہ پی پی 22کے عوام کسی قیمت پر ان نئی حلقہ بندیوں کو قبول نہیں کرینگے۔مقررین نے زور دیا کہ اگر نئی حلقہ بندیوں کو تبدیل نہ کیا گیا اور پرانے حلقہ جوں کا توں نہ رکھے گئے تو الیکشن کمیشن کے دفاتر کے باہر احتجاجی دھرنے ہونگے اور احتجاج کا دائرہ وسیع کر دینگے۔انہوں نے کہا کہ عوام الیکشن کمیشن میں موجود ان سازشی عناصر کو جانتے ہے اور جن کی کارغستانیاں عوام سے ڈھکی چھپی نہیں۔انہوں نے خطاب کے دوران کہا کہ رکن پنجاب اسمبلی سردار ذوالفقار علی خان دلہہ،رکن قومی اسمبلی سردار ممتاز خان ٹمن سے مطالبہ کیا کہ وہ قانونی جنگ بھی لڑیں۔اور عوام کو ان کے اصل حلقے واپس دلائے۔بعد ازاں لیگی کارکن ،عہدیداران،حلقہ پی پی 22کی سینکڑوں عوام شدید نعرہ بازی کرتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئیں۔حلقہ بندیاں نا منظور،کے فلک شگاف نعرے لگاتے ہوئے ہاتھوں میں پلے کارڈ اور بینر اٹھا کر احتجاج کرتے رہے۔بعد ازاں مذکورہ ریلی مختلف سڑکوں سے ہوتے ہوئی پبلک سیکرٹریٹ میں پر امن اختتام پذیر ہو گئی