چوآسیدنشاہ کے علاقے میں قتل ہونے والے ڈرائیور عون عباس کے قتل کا معمہ حل ہوگیا

چکوال۔ قصبہ کوٹلی سیداں تھانہ چوآسیدنشاہ کے علاقے میں قتل ہونے والے ڈرائیور عون عباس کے قتل کا معمہ حل ہوگیا۔ تیس جولائی2017 کو سید عون عباس کو قتل کر دیا گیا تھا۔ تفتیش کے دوران پولیس کو شبہ ہوا کہ مقتول کے سگے بھائی حسن عسکری نے اپنے سگے بھائی کو قتل کیا ہے اور پھر تفتیش کے دوران حسن عسکری نے بتایا کہ اس نے اپنے بھائی عون عباس کو اپنی سگی والدہ اور دو سگی بہنوں کے کہنے پر قتل کیا ہے۔ پولیس نے حسن عسکری سے قتل میں استعمال ہونے والا تیس بور پستول بھی برآمد کرلیا۔ پولیس نے والدہ اور دو سگی بہنوں کو بھی گرفتار کر کے علاقہ مجسٹریٹ سے ریمانڈ حاصل کیا اور مزید تفتیش جاری ہے۔اُدھر مقتول کی بیوہ زرمین کاظمی نے بتایا کہ میرے خاوند کو ظہور شاہ اورمرید حسین شاہ کی ایما پر قتل کیا گیا ہے کیونکہ عون عباس اپنی والدہ اور دو سگی بہنوں کو ان دونوں کے گھر آنے جانے پر منع کرتا تھا۔ جس پر ان ملزمان نے عون عباس کو رستے سے صاف کرنے پر حسن عسکری کو استعمال کر کے عون عباس کا قتل کرایا ہے۔