مندرہ چکوال روڈ منصوبہ چار سال میں بھی مکمل نہ ہوسکا

ڈھڈیال( نمائندہ خصوصی)دو وزراء اعظم کافتتاح کردہ منصوبہ چار سال میں بھی مکمل نہ ہوسکا۔ تفصیلات کے مطابق مندرہ چکوال اور سوہاوہ چکوال روڈ کے منصوبوں کی منظوری سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے2012میں دی تھی جن پر کام بھی شروع کردیا گیا تھا بعد میں چیف جسٹس (ر) افتخار چوہدری کی مداخلت پر ان منصوبوں پر کام بند کردیا گیا اور بعدازاں 2014میں موجودہ وزیراعظم نوازشریف نے 16جولائی کو ان منصوبوں کا دوبارہ0169615 افتتاح کیا تھا اور ان کو ایک سال کے اندر مکمل کرنے کاعندیہ دیا تھا مگر دو سال گزرنے کے باوجود بھی یہ منصوبے ابھی تک نامکمل ہیں نہ صرف نامکمل بلکہ صرف چالیس سے پچاس فیصد کام کیا گیا ہے اور ان منصوبوں پر کام کی رفتار دیکھ کر مزید پانچ سال تک ان کی تکمیل کے کوئی آثار نظر نہیں آرہے ہیں۔ منصوبوں کی منظوری سے اب تک چار سال کا عرصہ گزر چکا ہے اور ان سڑکوں کی ناگفتہ بہ حالت کی وجہ سے عوام شدید مشکلات سے دوچار ہونے کے ساتھ ساتھ مختلف حادثات میں کئی قیمتی جانیں گنوانے کے علاوہ کروڑوں روپے کی گاڑیوں کا نقصان بھی اٹھاچکے ہیں مگر عوام کی طرف سے آہ وپکار کرنے کے باوجود ان منصوبوں پر نہ ہی کام کی رفتار بڑھائی گئی ہے اور نہ ہی ان کی تکمیل کیلئے کوئی اقدام نظر آتا ہے ۔ حالات وواقعات سے معلوم ہوتا ہے کہ ٹھیکہ کنندہ این ایل سی ان منصوبوں کی تکمیل کی بجائے محض وقت گزاری کیلئے کام جاری رکھے ہو ئے ہے۔